Question & Answer

  • علامات بلوغت ظاہر نہیں؟؟؟؟؟

    بسم اللہ الرحمن الرحیم

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ

    میری ایج ۲۱ سال ہے اور میری ہائٹ ۴فٹ ہے اور مجھ میں ابھی تک بلوغت کی علامات ظاھر نہیں ہوئی،تو اگر مجھے کہیں نماز پڑھانی پڑ جائے تو میرا نماز پڑھانا کیسا ہے

    سائل:محمد علی شجاعت

    الجواب ھوالموفق للصواب:

    فقہائے کرام نے اس بات کی تصریح فرمائی ہے کہ جس لڑکےکی عمر 15 سال ہوجائے اور علامات بلوغت میں سے کوئی علامت ظاہر نہ ہوئی ہو تو وہ نگاہ شریعت میں بالغ ہےجیسا کہ درمختار میں مذکور ہے، بُلُوغُ الْغُلَامِ بِالِاحْتِلَامِ وَالْإِحْبَالِ وَالْإِنْزَالِ ، فَإِنْ لَمْ يُوجَدْ ذَلِكَ فَحَتَّى يَتِمَّ لِكُلٍّ مِنْهُمَا خَمْسَ عَشْرَةَ سَنَةً بِهِ يُفْتَى)۔ لڑکے کا بالغ ہونا احتلام کی وجہ سے ہے یاانزال کی وجہ سے یا حاملہ کردینے سے ہے پس اگر ان میں سے کوئی علامت نہ پائی جائے تو15سال پورے ہونے پر لڑکا بالغ مانا جائے گااور اسی پر فتوی ہے۔(الدرالمختار کتاب الحجر فصل بلوغ الغلام با الاحتلامٍ ص153)

    رہی یہ بات کہ سائل کا نماز پڑھانا کیسا ہے تو اس کے بارے میں بھی فقہائے کرام نے تصریح فرمائی کہ احق بالامامت کون ہے،جیسا کہ عالمگیری، عنایہ،بنایہ ، الاختیاراور جوھرہ نیرہ میں ہے أولى الناس بالإمامة أعلمهم بالسنةفإن تساووا فأقرؤهم فإن كانوا سواء فأعلمهم بالسنةفإن تساووا فأورعهم فإن تساووا فأسنهم ،(الفتاوی الھندیہ جز1ص83،العنایہ شرح الھدایہ جز1ص346،البنایہ شرح الھدایہ جز1ص328،الاختیار لتعلیل المختارجز1ص57،مجمع الانھرفی شرح الملتقی الابھرجز1ص107)

    لوگوں میں امامت کا سب سے زیادہ مستحق وہ شخص ہے جو سنت سے زیادہ باخبر ہو،پھر اگر سارے لوگ علم میں برابر ہوں تو لوگوںمیں جو سب سے اچھا قاری ہو،پھر اگر(اس وصف میں)سارے لوگ برابر ہوں تو وہ شخص( امامت )کرے جو اعلم بالسنۃ ہو،پھراگر(علم و قرأت)میں سب برابر ہوںتو لوگوں میں سب سے زیادہ متقی شخص امامت کا مستحق ہے،پھر اگر( ان تین میں) تمام لوگ برابر ہوں تو ان میں سب سے زیادہ عمروالاشخص ان کی امامت کرے

    ۔تو سائل اگر مذکورہ اوصاف میں سے کسی صفت کا حامل ہے تو وہ عام لوگوں بنسبت امامت کا زیادہ حقدار ہے ،

    ھذا ماعندی واللہ عزاسمہ اعلم

    ابوعفان محمدنعمان حنفی

    جامعہ غوثیہ رضویہ سکہر

Ask a Question

Tanzeem Publications

  • رب پہ بھروسہ از مولانا فاروق احمد سومرو
  • شب وروز کی پکار از مولانا کریم داد قادری
  • برائیوں کی جڑ از مولانا احمد رضا
  • ظلم کی برائی از مولانا مشتاق احمد شمس القادری
  • اخلاص از مولان گلشیر احمد قادری
  • رضا بالقضاء از مولانا دانیال رضا
  • نیکی کی بہاریں از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • مہمان نوازی از علامہ عبد المصطفی شیخ زادہ
  • جمالِ شریعت سندھی ترجمہ بہارِ شریعت پہلا حصہ از مفتی جمیل احمد چنہ
  • شکرِ پروردگار از تنظیم الارشاد زیرِ طبع
  • فضائل رمضان از علامہ محمد صادق سومرو
  • عمامہ کے ماثور رنگ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • الاصباح شرح صغری اوسط کبری از مفتی محمد شہزاد حافظ آبادی
  • ستائیس رجب کی عبادتیں ، عبادت یاگمراہی؟ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری