Question & Answer

  • بلاضرورت مسجد کی چھت پر نماز پڑھنا

    الاستفتاء

    کیا فرماتے ہیں علماء دین اس مسئلہ میں کہ

    گرمی کے زمانے میں گرمی کی وجہ سے مسجد شریف کے اندر برآمدہ صحن چھوڑ کر اوپر کی چھت پر جاکر فرض نماز تراویح ووتر پڑھنا وغیرہ پڑھنا جائزہے یا نہیں؟جواب عنایت فرمائیں

    الجواب بعون الملک الوھاب

    بلاضرورت مسجد کی چھت پر نماز پڑھنا مکروہ ہے اور گرمی کوئی عذر نہیں خصوصا جبکہ صحنِ مسجد کشادہ موجود ہو۔

    عالمگیری میں ہے

    الصعود علی سطح کل مسجد مکروہ ولھذا اذا اشتد الحر یکرہ ان یصلوا بالجماعۃ فوقہ الا اذا ضاق المسجد فحینئذ لا یکرہ الصعود علی سطحہ للضرورۃ

    فتاوی عالمگیری

    ج٥ ص٣٢٢

    واللہ تعالی اعلم بالصواب

    مفتی محمد ابراہیم القادری الرضوی غفر لہ

    جامعہ غوثیہ رضویہ سکھر ١١ ربیع الاول ١٤٠٨ھ مطابق٨٥/٦/١٢

Ask a Question

Tanzeem Publications

  • رب پہ بھروسہ از مولانا فاروق احمد سومرو
  • شب وروز کی پکار از مولانا کریم داد قادری
  • برائیوں کی جڑ از مولانا احمد رضا
  • ظلم کی برائی از مولانا مشتاق احمد شمس القادری
  • اخلاص از مولان گلشیر احمد قادری
  • رضا بالقضاء از مولانا دانیال رضا
  • نیکی کی بہاریں از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • مہمان نوازی از علامہ عبد المصطفی شیخ زادہ
  • جمالِ شریعت سندھی ترجمہ بہارِ شریعت پہلا حصہ از مفتی جمیل احمد چنہ
  • شکرِ پروردگار از تنظیم الارشاد زیرِ طبع
  • فضائل رمضان از علامہ محمد صادق سومرو
  • عمامہ کے ماثور رنگ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • الاصباح شرح صغری اوسط کبری از مفتی محمد شہزاد حافظ آبادی
  • ستائیس رجب کی عبادتیں ، عبادت یاگمراہی؟ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری