Question & Answer

  • کن وجوہات کی وجہ سے نمازی کو مسجد سے روجا سکتاہے

    الاستفتاء

    جناب مفتی صاحب

    اسلام میں وہ کونسی وجوہات ہیں جن کی وجہ سے ایک نمازی کو مسجد میں نماز ادا کرنے سے روکا جا سکتاہے۔ بینک کے ملازمت کرنا کیساہے کیا یہ تنخواہ جائز ہے یا ناجائز؟

    اگر اس رقم سے کوئی چیز خرید کر مسجدمیں دے تو اس پر نماز پڑھنا جائزہے یا نہیں؟ مہربانی فرما کر جواب عنایت کیجئے؟

    الجواب بعون الملک الوھاب

    الجواب(١)اگرکوئی نمازی مسجد میں آکر فتنہ پھیلائے اور بار بارسمجھانے سے باز نہ آئے تو اسے روک دینا جائز ہے اسی طرح اگر کسی نمازی کے بدن سے بدبو آئے یا کسی ایسی بیماری میں مبتلا ہو کہ اس کی آمد سے دوسرے نمازیوں کو تکلیف ہوتی ہو تو اسے بھی مسجد میںآنے سے روکنا جائزہے۔

    الجواب(٢)بینک کی ملازمت جس میں ملازم کو سود کی رقم گننی پڑے دینی پڑے لکھنی پڑے ناجائز ہے اوت تنخوۃ بھی جائز نہیں اب اگر مسجد کیلئے دری لینی پڑے تو اس کا شرعی طریقہ یہ ہے کہ دری خریدتے اور دام چکاتے وقت وہ روپیہ دکھا کر متعین نہ کیا جائے بلکہ محض دام چکا کر رقم حوالے کر دی جائے تو دری حلا ل ہو جائے گی اور عموما بازری اشیاء اسی طرح خریدی جاتی ہیں ۔ہاں اگر حرام روپیہ کی جانب اشارہ کیا کہ یہ دوں گا یا اس کے بدلے میں دو پھر وہی روپیہ دیا تو روپے کی طرح وہ شیء بھی حرام ہو جائے گی۔

    واللہ تعالی اعلم بالصواب

    مفتی محمد ابراہیم القادری الرضوی غفرلہ

    جامعہ غوثیہ رضویہ سکھر ١٤ ربیع الاول ١٤٠٨ھ مطابق٨٧/١١/٧

Ask a Question

Tanzeem Publications

  • رب پہ بھروسہ از مولانا فاروق احمد سومرو
  • شب وروز کی پکار از مولانا کریم داد قادری
  • برائیوں کی جڑ از مولانا احمد رضا
  • ظلم کی برائی از مولانا مشتاق احمد شمس القادری
  • اخلاص از مولان گلشیر احمد قادری
  • رضا بالقضاء از مولانا دانیال رضا
  • نیکی کی بہاریں از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • مہمان نوازی از علامہ عبد المصطفی شیخ زادہ
  • جمالِ شریعت سندھی ترجمہ بہارِ شریعت پہلا حصہ از مفتی جمیل احمد چنہ
  • شکرِ پروردگار از تنظیم الارشاد زیرِ طبع
  • فضائل رمضان از علامہ محمد صادق سومرو
  • عمامہ کے ماثور رنگ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • الاصباح شرح صغری اوسط کبری از مفتی محمد شہزاد حافظ آبادی
  • ستائیس رجب کی عبادتیں ، عبادت یاگمراہی؟ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری