Question & Answer

  • فوت شدگان کی طرف سے قربانی

           کیا اپنے مرحومین کی جانب سے قربانی کی جا سکتی ہے؟

    محمد نعمان قادری

    سوفٹ زون کمپیوٹر

    فیرئر روڈ سکھر

    الـــــــــــــــــــجــــــــــــــــــــــــــوابــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ۔۔

          جی ہاں ، مسلمان مرحومین کی جانب سے قربانی کی جا سکتی ہے۔ حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالی عنہ فرماتے ہیں کہ سید عالم صلی اللہ تعالی علیہ وسلم قربانی کا ارادہ فرماتے تو دو بڑے بڑے ، فربہ ، سینگوں والے ، سفید سیاہی مائل ، خصی مینڈھے خریدتے۔ پھر ان میں سے ایک کو اپنی امت کی طرف سے ، جنہوں نے توحید ورسالت کی گواہی دی ، ذبح فرماتے اور دوسرا اپنی اور اپنے اہل کی طرف سے ذبح فرماتے۔

          (سنن ابن ماجہ حدیث۳۱۱۳)

          اور صحیح مسلم میں ہے کہ سید عالم صلی اللہ تعالی علیہ وسلم قربانی سے پہلے یوں دعا فرماتے:

           باسم الله اللهم تقبل من محمد وآل محمد ومن أمة محمد

           (صحیح مسلم حدیث ۵۲۰۳)

          اور یقینا اس وقت بہت سے امتی اس دنیا سے جا چکے تھے ، تو رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم کی قربانی جہاں موجودہ امت کی طرف سے ہوتی وہیں آئندہ امت کی طرف سے اور ان کی طرف سے بھی ہوتی جو اس قربانی سے پہلے اس دنیا سے جا چکے ہوتے۔

    واللہ عز اسمہ اعلم

    انا العبد الفقیر الی مولای الغنی

    ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری

    خطیب مکرانی مسجد سکھر

Ask a Question

Tanzeem Publications

  • رب پہ بھروسہ از مولانا فاروق احمد سومرو
  • شب وروز کی پکار از مولانا کریم داد قادری
  • برائیوں کی جڑ از مولانا احمد رضا
  • ظلم کی برائی از مولانا مشتاق احمد شمس القادری
  • اخلاص از مولان گلشیر احمد قادری
  • رضا بالقضاء از مولانا دانیال رضا
  • نیکی کی بہاریں از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • مہمان نوازی از علامہ عبد المصطفی شیخ زادہ
  • جمالِ شریعت سندھی ترجمہ بہارِ شریعت پہلا حصہ از مفتی جمیل احمد چنہ
  • شکرِ پروردگار از تنظیم الارشاد زیرِ طبع
  • فضائل رمضان از علامہ محمد صادق سومرو
  • عمامہ کے ماثور رنگ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری
  • الاصباح شرح صغری اوسط کبری از مفتی محمد شہزاد حافظ آبادی
  • ستائیس رجب کی عبادتیں ، عبادت یاگمراہی؟ از ابو اریب محمد چمن زمان نجم القادری